پاکستان اور بھارت کے درمیان 2003ءکے سیز فائر معاہدے پر عمل درآمد کا معاہدہ ہوا ہے، مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی،ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری

53

اسلام آباد۔:پاکستان دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چوہدری نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان 2003ءکے سیز فائر معاہدے پر عمل درآمد کا معاہدہ ہوا ہے، مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، ہمارا موقف واضح ہے کہ مسئلہ کشمیر کا حل کشمیریوں کی امنگوں کے مطابق اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تحت ہونا چاہیے۔

منگل کو نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بھارت کی طرف سے 2020ءمیں 3097 سیز فائر خلاف ورزیوں میں 28 کشمیری شہید اور 257 زخمی ہوئے جس میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔ زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ پاکستان کی نیک نیتی میں کوئی شک نہیں ہے، پاکستان ہمیشہ امن کی بات کرتا رہا ہے اور ہماری خواہش ہے کہ پورے خطے میں امن ہو، 2019ءمیں بھارت کی طرف سے جب بالاکوٹ پر مس ایڈونچر کیا گیا تو پاکستان نے امن کی خاطر بھارتی پائلٹ واپس ان کے حوالے کیا، اس کے ساتھ ساتھ چیلنجز کے باوجود کرتاپور کوریڈور کا اقدام اٹھایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اب بھی امن کا خواہاں ہے، ہمیشہ بھارت نے مذاکرات سے راہ فرار اختیار کی، ہم بار بار کہہ رہے ہیں کہ بات چیت ہی اس مسئلے کا حل ہے، چاہتے ہیں کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان جتنے بھی معاملات ہیں بین الاقوامی قوانین کے مطابق انہیں حل کیا جانا چاہیے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان کشمیر سمیت ہر معاملے پر بھارت کے ساتھ بات کرنے کیلئے تیار ہے لیکن جموں و کشمیر کور ایشو ہے اس پر پیشرفت ضروری ہے، ہم سمجھتے ہیں کہ بھارت کی طرف سے 5 اگست 2019ءکو اٹھائے گئے اقدامات غیرقانونی اور یکطرفہ ہیں، اس سے دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی بڑھی ہے، مسئلہ کشمیر بین الاقوامی تنازعہ ہے اور اسے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ڈی جی ایم اوز کے درمیان رابطہ ہوا تھا، دونوں افواج کے درمیان ہاٹ لائن پر رابطہ رہتا ہے اسی وجہ سے دونوں ممالک کے درمیان حالیہ معاہدہ ممکن ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت پہلے بھی کئی مرتبہ سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کر چکا ہے اسلئے پاکستان بارہا عالمی برادری کو بھارت کی طرف سے خدشات کے حوالے سے باور کراتا رہتا ہے۔

Comments are closed.

Subscribe to Newsletter
close-link