وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت اجلاس، وزیراعظم کامیاب نوجوان پروگرام کے تحت ہنر سب نوجوانوں کے لئے پراجیکٹ کا جائزہ

213

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی و خصوصی اقدامات اسد عمر نے جمعہ کو وزیر اعظم کامیاب جوان پروگرام کے تحت “ہنر سب نوجوان کے لئے” کے منصوبے کا جائزہ لینے کے لیے ایک اجلاس کی صدارت کی۔ؕ

اجلاس میں ڈاکٹر شبنم سرفراز، ممبر سوشل سیکٹر اینڈ ڈیولیشن، پلاننگ کمیشن، چیئرمین نیشنل ووکیشنل اینڈ ٹیکنیکل ٹریننگ کمیشن (نیوٹیک)، سید جواد حسن، ساجد بلوچ، ایگزیکٹو ڈائریکٹر (نیوٹیک) اور دیگر اہم عہدیداروں نے شرکت کی۔

چیئرمین نیوٹیک نے اپنی تفصیلی بریفنگ میں اجلاس کو بتایا کہ پروگرام کے تحت مجموعی طور پر 74,737 ٹرینیز کو تربیت دی گئی ہے۔ اس کا مقصد ملک کے نوجوانوں کو ٹیکنالوجی سے متعلق مختلف شعبوں میں بااختیار بنانا ہے۔ اس میں ہائی ٹیک ٹیکنالوجیز (سائبر سیکیورٹی، مصنوعی ذہانت، کلاؤڈ کمپیوٹنگ، انٹرنیٹ آف تھنگز، ڈیجیٹل مارکیٹنگ وغیرہ) میں 35,268 شامل ہیں۔

اس کے علاوہ 39,469 نوجوانوں کو روایتی ٹیکنالوجی جیسے الیکٹریشن، ویلڈر، پلمبر، بیوٹیشن، گھریلو ٹیلرنگ وغیرہ میں تربیت دی گئی ہے۔ اس میں 20% وہ لوگ شامل ہیں جو فری لانسنگ کر رہے ہیں۔اجلاس کو مزید بتایا گیا کہ غیر رسمی شعبے میں ہنر مند 23,000 نوجوانوں کو ریکگنیشن آف پرائر لرننگ (RPL) کے تحت سرٹیفکیٹ دیا گیا ہے۔ پروگرام کے تحت 10 کنٹری آف ڈیسٹی نیشن فیسیلی ٹیشن سینٹرز بھی قائم کیے گئے ہیں۔

نیشنل ایمپلائمنٹ ایکسچینج ٹول اور افرادی قوت کا ڈیٹا بیس تیار کر کے مکمل طور پر فعال بنا دیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر نے اس منصوبے کے تحت ہونے والے اقدامات کو سراہا اور نوجوانوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے ہنر مندی کی تربیت کو بڑھانے کے مزید راستے تلاش کرنے کی ضرورت پہ زور دیا۔

وزیر نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح نوجوانوں کو تربیت دینا ہے تاکہ وہ مختلف شعبوں میں ملازمتیں حاصل کر سکیں۔ اجلاس میں اسکل ڈویلپمنٹ پروگرام کے ذریعے 10 لاکھ ملازمتوں کے ہدف کے منصوبے کے اگلے مرحلے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

Comments are closed.

Subscribe to Newsletter
close-link