اقوام متحدہ کے 2030 کے پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول کے لئے معمر افراد کے کردار کا اعتراف کیا جائے، پاکستان

56

اقوام متحدہ: پاکستان نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے پائیدار ترقی کے اہداف 2030 کے حصول کے لئے معمر افراد کے کردار کا اعتراف کیا جائے۔ اقوام متحدہ میں پاکستان کے نائب مستقل مندوب عامر خان نے اقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ آن ایجنگ کے اجلاس میں گروپ آف 77 کی نمائندگی کرتے ہوئے بتایا کہ اس اعتراف کے طور پر معمر افراد کے انسانی حقوق کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔

انہوں نے کہا کہ غربت کے خاتمے سمیت تمام ترقیاتی اہداف میں معمر افراد پر خصوصی توجہ مرکوز کی جائے اور معمر افراد کے سماجی ، معاشی اور جذباتی تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے میڈرڈ پلان آف ایکشن 2002 کے مطابق اقدامات کیے جائیں اور اس مقصد کے حصول کے لئے بین الاقوامی تعاون کو بڑھایا جائے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ معمر افراد کے حقوق کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے عمر کی بنیاد پر امتیازی سلوک، نظر انداز کئے جانے ، بدسلوکی اور تشددکے خاتمے اور سماجی تحفظ ، غذائی اشیاء ، رہائش ،صحت ، روزگار، قانونی معاونت اور انصاف کی سہولتوں تک رسائی فراہم کی جائے۔ کورونا وائرس کی وبا نے معمر افراد بالخصوص معمر خواتین پر نسبتاً زیادہ منفی اثرات مرتب کئے ہیں۔

اس موقع پر اقوام متحدہ میں پاکستانی مشن میں تھرڈ سیکرٹری محمد راشد نے قومی موقف پیش کر تے ہوئے کورونا وائرس کی وبا کے دوران معمر افراد کو پیش آنے والے مسائل کا ذکر کیا اور بتایا کہ پاکستان کی حکومت نے اس وبا کے دوران معمر افراد خاص طور سے معمر خواتین کی ضروریات اور ان کو درپیش خطرات کو اجاگر کیا ہے۔

پاکستانی مندوب محمد راشدملک نے کہا کہ نوجوان آبادی کے زیادہ تناسب کے باوجود ہم معمر افراد کی خصوصی ضروریات کے بارے میں شعور بیدار کرنے کے ساتھ ساتھ معاشرے میں ان کے تعاون کی اہمیت کو پوری طرح سے تسلیم کرتے ہیں۔سینئر سٹیزنز ایکٹ2021 معمر افراد کو ایک بامعنی زندگی گزارنے اور ان کی معاشرتی شراکتداری میں درپیش رکاوٹوں کی روک تھام یقینی بناتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سینئر سٹیزن کارڈز معمر افراد کو عجائب گھروں، پارکوں اور لائبریریوں تک مفت رسائی فراہم کرتے ہیں، معمر افراد دانتوں سمیت صحت کی جملہ سہولیات کے ساتھ ساتھ امراض کی تشخیص اور لیبارٹری کی سہولیات اور ادویات کی خریداری میں رعایت کے بھی حقدار ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم عالمی سطح پر اس انتہائی اہم مسئلے سے نمٹنے کی فوری ضرورت اور آگے بڑھنے کے راستے کو تسلیم کرتے ہیں۔

اس موقع پر اقوام متحدہ کےی انسانی حقوق کی ہائی کمشنر مشیل بیچلٹ نے زور دیا کہ آج کے دور میں بنیادی حقوق کے حوالے سے معمر افراد کو زیادہ اور مضبوط تحفظ کی ضرورت ہے تاکہ وہ مکمل طور پر اپنے حقوق سے لطف اندوز ہو سکیں لیکن حقیقت میں بین الاقوامی قانونی فریم ورک( جس سے ہر کسی کوبلاامتیاز تحفظ حاصل ہونا چاہیے )میں اب بھی معمر افراد شامل نہیں ہیں۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ معمر افراد کے خلاف نہ صرف تشدد، انہیں نظرانداز کرنے اور بدسلوکی کے خاتمے کی ضرورت ہے بلکہ انہیں معیاری صحت کی سہولیات کی فراہمی سمیت طویل مدتی دیکھ بھال آسانی سے فراہم کی جانی چاہیے۔

Comments are closed.

Subscribe to Newsletter
close-link